Friday, November 10, 2017

پرویز مشرف کا اپنے سیاسی مستقبل سے متعلق چونکا دینے والا فیصلہ

پاکستان سرزمین پارٹی اور ایم کیو ایم کا اتحاد ایک دن چلا اور ختم ہو گیا۔ 'اگر دونوں جماعتیں اتحاد کر لیں تو بہتر ہے، لیکن یہ دونوں اکٹھی ہو بھی گئیں تب بھی میں اس کا سربراہ نہیں بنوں گا

 

 

پاکستان کے سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کی جماعت آل پاکستان مسلم لیگ نے جمعہ کو 'پاکستان عوامی اتحاد' کے نام سے 23 جماعتوں کا گرینڈ الائنس قائم کرنے کا اعلان کیا ہے۔

آل پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی دفتر میں پرویز مشرف نے اس الائنس کے حوالے کہا کہ 'ایک بڑا فیصلہ کہ ہم اکٹھے ہونا چاہتے ہیں اور ایک نام کے نیچے اکٹھا ہونا چاہتے ہیں۔ اس بارے میں ہم نے نام بھی سوچ لیا ہے جو بہت اچھا نام ہے پاکستان عوامی اتحاد۔ اگر آپ سب لوگوں کو یہ نام منظور ہے تو مجھے بھی یہ نام منظور ہے۔'

اجلاس میں نئے گرینڈ الائنس کے منشور کو بھی جلد پیش کرنے کا اعلان کیا گیا۔

 اس الائنس کا مقصد مسلم لیگ کے تمام دھڑوں کا اکٹھا کرنا ہے۔ البتہ تجزیہ کار اس ضمن میں زیادہ پرامید نہیں۔ 

اس اعلان کے موقع پر پرویز مشرف نے ایم کیو ایم پاکستان سے متعلق تشویش ظاہر کی، مگر اس کا سربراہ بننے کے خبر کو افواہ قرار دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان سرزمین پارٹی اور ایم کیو ایم کا اتحاد ایک دن چلا اور ختم ہو گیا۔ 'اگر دونوں جماعتیں اتحاد کر لیں تو بہتر ہے، لیکن یہ دونوں اکٹھی ہو بھی گئیں تب بھی میں اس کا سربراہ نہیں بنوں گا 

 رواں ڈیسک

No comments:

Post a Comment