Wednesday, October 11, 2017

شاہ کار صحافتی فن پاروں کا مصور، سید شہزاد مسعود

پرنٹ میڈیا دن بہ دن سکڑتا جارہا ہے، اخبارات سے منسلک افراد کا کم تن خواہوں اور گھٹتے مواقع کے باعث الیکٹرانک میڈیا سے منسلک افراد کے مقابلے میں احساس کمتری میں مبتلا ہونا فطری ہے۔ اس کے باوجود اخبارات سے وابستہ چند افراد ایسے بھی ہیں، جو اپنی تخلیقی صلاحیتوں کا اتنا متوازن اظہار کرتے ہیں کہ مایوسی کے اندھیرے میں امید کے دیے جل اٹھتے ہیں۔

 

سید شہزاد مسعود ایسا ہی ایک نام ہیں۔ وہ ایک موقر روزنامے کے میگزین سیکشن سے منسلک ہیں، اور اب تک کئی یادگار ٹائٹل بنا چکے ہیں۔ بدقسمتی سے صحافت کی رفتار نے ان فن پاروں کو وقت کی گرد میں گم کر دیا۔

رواں نیوز نے ایسے ہی چند فن کاروں کو بازیافت کرنے کی کوشش کی ہے، جس اس حقیقی فن کار کے قد و قامت کے تعین میں معاون ہوں گے۔

   رواں نیوز

  .........

یوم عاشور کے موقع پر بنایا گیا ایک متاثر کن ٹائٹل

 

ممتاز صحافی، جناب احفاظ رحمان کی شہرہ آفاق کتاب، سب سے بڑی جنگ کا منفرد ٹائٹل، جسے دیکھ کر ایک معروف ناشر نے کہا، کتابوں کی دنیا میں ایسی جزئیات نگاری کی مثال نہیں ملتی


 صحافتی ڈیزائنگ میں جزئیات نگاری کی ایک مثال سہ ماہی اجرا کے سلور جوبلی نمبر کا یہ ٹائٹل بھی ہے، جو اجرا کے چوبیس ٹائٹلوں کی جڑت کا نتیجہ ہے

 

سال نامے کا ٹائٹل بنانے میں بھی سید شہزاد مسعود اپنی مثال آپ ہیں

فیفا ورلڈ کپ کے تاریخی موقع پر بنایا گیا ٹائٹل

کلیات کا ٹائٹل بنانے کو ایک سچا کھرا آرٹسٹ درکار۔ کلیات احسن سلیم کے ناشر کو سید شہزاد مسعود کی صورت ایک ایسا آرٹسٹ میسر تھا

 

ملاحظہ فرمائیں ایکسپریس میگزین کے لیے بنایا گیا ایک اور خوب صورت ٹائٹل

 

No comments:

Post a Comment